میرا سلائڈ شو

یہ ویڈیو ہماری طرف سے آپ کیلئے اس وقت تک رہے گا جب تک میں اچھی ویڈیوز اپلوڈ نہ کردوں ۔

خوابوں کی حویلی اردو ہے

مختلف شعراء کے مختلف بند پیشِ خدمت ہے...!


اردو ہے مرا نام میں خسروؔ کی پہیلی
میں میرؔ کی ہم راز ہوں غالبؔ کی سہیلی غالبؔ نے بلندی کا سفر مجھ کو سکھایا
حالیؔ نے
مروّت کا سبق یاد دلایا
اقبال نے آئینۂ حق مجھ کو دکھایا
مومن نے سجائی میرےخوابوں کی حویلی اردو ہے مرا نام میں خسرو کی پہیلی
_________ _________ ________ ______
نہ اردو ہے زباں میری نہ انگلش ہے زباں میری زبانِ مادری کچھ بھی نہیں گونگی ہے ماں میری 
_________ ________ ________ _________
نہیں کھیل اے داغ ، یاروں سے کہہ دو
کہ آتی ہے اردو زباں آتے آتے
_________ ________ ________ _______
وسیم بریلوی کا یہ شعر بھی دیکھیے

تمہاری نفرتوں کو پیار کی خوشبو بنا دیتا میرے بس میں اگر ہوتا تجھے اردو سکھا دیتا
 _________ ________ _________ _______
شبینہ ادیب صاحبہ کا ایک شعر

نہ مٹی تھی ، نہ مٹی ہے ، نہ مٹے کی اردو چاہنے والوں کے ہونٹوں پہ رہے گی اردو
 _________ ______ ________ ________
لتا حیا صاحبہ کے چند اشعار

صبح کا پہلا پیام اردو
ڈھلتی ہوئی سی جیسے شام اردو
اتریں جا ں تارے وہیں بام اترو
بڑی کم سِن گلفام اردو
جیسے نئے سال کا یہ دن ہو نیا
اور بیتے سال کی ہو آخری دعا
نیا سال نئی رام رام اردو
تجھے نئی صدی کا سلام اردو
________ _________ ________ ________
ماجد دیوبندی کو بھی سنیے

ذرا میں زیر ہو جاتا ہے دُشمن
وہ اس لہجے میں اردو بولتا ہے
_______ ________ ________ ________
_______ ________ ________ ________
_______ ________ ________ ________
_______ ________ ________ ________
ترتیب و پیشکش عیبدالرحمان عقیل
_______ ________ارریاوی ______ ___

مولانامحمد ولیؔ رحمانی صاحب کی تحریر سے ایک خصوبصورت اقتباس

مولانامحمد ولیؔ رحمانی صاحب کی تحریر سے ایک خصوبصورت اقتباس

        پوری صدی کے ہندوستانی سماجی پراچٹتی نظرڈالئے تولگتاہے قدریں بدلین ،روایتوں نے کروٹ لی،مزاج بدلا،انداز بدلااورتبدیلی ایسی آئی کہ تجربہ کار نگاہیں زیرلب کہہ رہی ہیں کہ ''محوحیرت ہوں کہ دنیا کیاسے کیاہوجائے گی''۔۔۔۔۔۔۔صاحبان عزیمت کنارے لگ گئے ،اصحاب رخصت ارباب عظمت بن گئے،کم نظرمعتبر ہوگئے اورمعتبر شخصیتیں طاق نسیاں میں سجادی گئیں۔ایمان ویقین کاسودا ہونے لگا،ایمانداری جیساوصف لازم گم ہے۔اچھے اچھوں کی بھیڑ میں اسے ڈھونڈناپرتاہے۔ ۔۔۔۔۔۔۔مزاج ایسابدلاہے کہ ناخوب خوب تر ہوگیا۔

       صراحت کبھی مایہ ناز تھی،منافقت اب طرزہ امتیاز ہے۔جرات کبھی ایمان کانشان تھا،مصلحت اب حرز جان ہے۔رواداری اخلاق کا حصہ تھی۔مکاری ترقی کا زینہ ہے۔ کبھی کبر ترفع میں جھلکتاتھا،اب کبربانداز تواضع سامنے آتاہے۔نئے دور مین کامیابی کے عجیب عجیب نسخے ایجاد ہوگئے ہیں۔

       قلب وقلم ،نگاہ ونظر میں فرق وفاصلہ کامیابی کا نسخہ سمجھاجاتاہے۔ کذب لطیف کی مناسب آموزش اورمنافقت کی متناسب آمیزش کے بغیر شخصیت کی تعمیر نہیں ہوتی۔ جیسے خالص سونے سے زیور نہیں بناکرتا،کچھ''کھاد''کا تعاون''ضرور ی ہے۔ یہ تبدیلیاں محسوس مملوس حقیقتیں ہیں۔

بحوالہ مجموعہ رسائل رحمانی صفحہ60/

         ترتیب و پیشکش :- عبیدالرحمان عقیل ندویؔ            ڈومریا ارریاوی

کوشش سے منزل

                 منزل مقصود


         ہر روز انسان کو اپنے عظیم ارادوں کے تحفظ کلیئے وقت،حالات و واقعات سے جنگ لڑنا پڑتی ہے اور اپنے حسین مستقبل کے حصول کلیئے مکمل استقامت اور ثابت قدمی سے معاشرتی اقدار سے نبرد آزما ہونا پڑتا ہے..ایک متوازن شخصیت بننے کلیئے مختلف مشاغل اپنانا پڑتے ہیں...ہر روز ایک امتحان سے گزرنے اور خطرات مول لینے کے بعد ہی دراصل آپکو کچھ حاصل کرنیکا موقع ملتا ہے...اسمیں غلطی کے امکان کو نظر انداز نہیں کیا جاسکتا....لیکن گر گر کر سنبھلنا ہی در اصل زندگی ہے...صورتحال سے گبھرانا انسانیت کی توہین کے مترادف ہے زیادہ ضروری ہے کہ اپنے آپ سے مطمئن رہنا سکھیئے بجائے اسکے آپ جو کر رہے ہیں اسکے متعلق متفکر رہیں محنت،کوشش ایک وسیلہ ہے جس سے منزل مقصود ملتی ہے.

٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭


اقتباس ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔ عبدالاحد ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔جرمنی 


٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭

انتخاب ۔۔۔۔۔۔۔۔۔ عبیدالرحمان عقیل 

انسانی دماغ کے بارے میں حیرت انگیز انکشاف

انسانی دماغ کے بارے میں حیرت انگیز انکشاف

سان فرانسسکو (نیوز ڈیسک) انسان کے بچے کی نشوونما دیگر جانوروں کے بچوں کی نسبت بہت سست فرار ہوتی ہے اور سائنسدانوں نے یہ معلوم کرلیا ہے کہ ایسا کیوں ہوتا ہے۔ نارتھ ویسٹرن یونیورسٹی کے ماہرین کا کہنا ہے کہ بچوں کے دماغ انتہائی تیزی سے بڑھ رہے ہوتے ہیں اور جسمانی توانائی کا ایک بڑا حصہ ان کی نشوونما میں استعمال ہوتا ہے جس کی وجہ سے باقی جسم کی نشوونما سست ہوجاتی ہے۔ پانچ سالہ بچے کا دماغ بڑی عمر کے شخص کے دماغ کی نسبت پانچ گنا زیادہ توانائی استعمال کرتا ہے۔ یہ توانائی گلوکوز کی صورت میں استعمال ہوتی ہے۔ انسانی دماغ دیگر جانوروں کے دماغ کی نسبت کئی گناہ زیادہ کام کرتا ہے اور اس کی ذہانت اور معلومات ذخیرہ کرنے کی بے پناہ صلاحیت کی وجہ سے اس کا سائز بھی تیزی سے بڑھتا ہے اور یہ توانائی بھی زیادہ استعمال کرتا ہے۔ ایک اندازے کے مطابق چار سال ک ی عمر میں دماغ کا توانائی کا استعمال عروج پر پہنچ جاتا ہے اور یہ شرح باقی جسم کی نسبت 66 فیصد تک پہنچ جاتی ہے۔ یہ تحقیق ”پروسیڈنگز آف نیشنل اکیڈمی آف سائنسز“ نامی سائنسی جریدے میں شائع کی گئی ہے۔

عورتیں مردوں کو دیکھتے ہی کن باتوں پر متوجہ ہوتی ہیں

عورتیں مَردوں کو دیکھتے ہی ان کی کن باتوں پر توجہ دیتی ہیں ؟

یرس (نیوز ڈیسک) خواتین کی نظر جب مردوں پر پڑتی ہے تو لامحالہ طور پر ابتدائی پسندیدگی یا ناپسندیدگی کا دارو مدار ظاہری شکل و شباہت پر ہی ہوتا ہے کہ اعتماد، دیانت، ذہانت اور دیگر خوبیاں تو آہستہ آہستہ ہی سامنے آتی ہیں۔ اگر آپ یہ جاننا چاہتے ہیں کہ آپ کو دیکھتے ہی خواتین کن باتوں کو بہت دھیان سے نوٹ لیتی ہیں تو مندرجہ ذیل باتوں کو بہت غور سے پڑھیں:
 خواتین سب سے زیادہ اور فوری توجہ مردوں کے قد اور وزن کو دیتی ہیں۔ بہت کم یا بہت زیادہ قد اور وزن والے مردوں کو وہ زیادہ دلکش نہیں سمجھتیں۔ عموماً خواتین مردوں کے قد کا موازنہ اپنے قد سے کرتی ہیں کہ وہ ان کی نسبت کتنے لمبے ہیں۔
 دوسری اہم اور قابل توجہ بات یہ ہے کہ آپ کے بال، لباس، وضع قطع اور صفائی کا معیار کیسا ہے۔ ان باتوں کا خصوصی خیال رکھیں۔
 جسمانی اور ظاہری خوبصورتی کے بعد مسکراہٹ کی باری آتی ہے۔ اگر آپ اچھی مسکراہٹ کے مالک ہیں تو خواتین آپ کے ساتھ زیادہ محفوظ اور مطمئن محسوس کریں گی۔
 حس مزاح بہت اہمیت کی حامل ہے لیکن خیال رہے کہ خواتین کو متاثر کرنے کیلئے ضروری ہے کہ آپ انہیں ہنسا سکیں اگر آپ اکیلے ہی قہقہے لگارہے ہیں تو اس کا فائدے کی بجائے نقصان ہوسکتا ہے۔
 پراعتمادی دلکش مردانہ شخصیت کا لازمی حصہ ہے، اگر آپ پر اعتمادی کا مظاہرہ کریں تو خواتین آپ کے ساتھ بلا ہچکچاہٹ تعلق پیدا کرنے میں آسانی محسوس کریں گی لیکن خیال رہے یہ پر اعتمادی غرور میں نہ بدل جائے۔
 خواتین دلچسپ گفتگو کرنے والے مردوں کو بہت پسند کرتی ہیں لیکن یہ بات بہت اہم ہے کہ ان پر گفتگو کا سحر ضرور طاری کریں مگر اپنے بارے میں سب کچھ بہت جلد مت بتائیں۔ آپ کی زندگی کے مختلف پہلو جتنی دیر سے ان پر کھلیں گے آپ انہیں اتنے ہی دلچسپ اور دلکش محسوس ہوں گے۔
 

نوٹ


"لفظ بولتے ہیں " ویب سائٹ پر شائع ہونے والی تمام نگارشات قلم کاروں کی ذاتی آراء پر مبنی ہیں۔ ادارہ کا ان سے متفق ہونا ضروری نہیں۔


ہمیں فالو کریں

گوگل پلس

فیس بک پیج لائک کریں

بذریعہ ای میل حاصل کریں